<
Breaking News Pakistan - بریکنگ نیوز پاکستان
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

پنجاب: سرکاری ہسپتالوں میں کروڑوں کی ادویات زائد المیعاد ہوگئیں

لاہور(سلیمان چودھری ) وفاقی حکومت نے ایک طرف ادویات کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کرکے مریضوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ ڈالے ہیں تو دوسری جانب پنجاب کے سرکاری ہسپتالوں کی انتظامیہ نے نااہلی اور غفلت کا بھی ریکارڈ قائم کردیا، ان ہسپتالوں میںکروڑوں روپے مالیت کی 9 لاکھ سے زائد ادویات سٹور میں پڑے پڑے زائد المیعاد ہوگئی ہیں، ملتان انسٹی ٹیوٹ آف کڈنی ڈیزیز کی انتظامیہ نے غفلت کی انتہا کردی ، اس ہسپتال میں 7لاکھ 16ہزار468 ادویات زائد المیعاد ہوگئیں، نشتر ہسپتال ملتان میں 29ہزار136 ادویات زائد المیعاد ہوئیں، لاہور میں پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف مینٹل ہیلتھ میں 40ہزار ادویات زائد المیعاد ہوکر ضائع ہوئیں، ایک سال گز ر گیا ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے ان ادویات کے متبادل نئی ادویات حاصل نہیں کی گئیں، میڈیسن انوینٹری مینجمنٹ سسٹم کے تحت مختلف ہسپتالوں میں ادویات کے حوالے سے ایک رپورٹ سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کو ارسال کر دی گئی ، رپورٹ کے مطابق ملتان انسٹی ٹیوٹ آف کڈنی ڈیزیز میں سب سے زیادہ ادویات پڑے پڑے زائد المیعاد ہو گئی ہیں، ان میں ڈیکلوفینک سوڈیم 1لاکھ 3ہزار525، ڈومپری ڈون 10ایم جی 71ہزار250، میکسی فلیوکسن400ایم جی 47ہزار960، الفلا کالڈیکول 0.25ایم جی 45ہزار640، ایسومیپرازول 40ایم جی 57ہزار980، ٹراماڈول 50ایم جی 40ہزار، سیفگزائم 400ایم جی 27ہزار855، سیفٹازیڈائیم 1گرام 45ہزار887، آئی وی کینولا18جی 16ہزار آئی وی کینولا 20جی 16ہزار، 13ہزار700یورن بیگ ، ٹراما ڈول ایچ سی آئی 100ایم جی 12ہزار643، نلبوپائن ایچ سی آئی 10ایم جی 12ہزار618، ایموکسلین 500ایم جی 11ہزار770، ایسٹالوپرام 10ایم جی 10ہزار، ڈوزاسن 2ایم جی 10ہزار ، سیفروفلاکسن 200ایم جی 9ہزار647، ہیلو فائبر ڈائلائز سیٹ 9600، بیسکو پرولول 5ایم جی 8ہزار976، ای سی جی الیکٹروڈ وائیٹ ڈوٹ 8ہزار750، بیس پرورول 5ایم جی 8476، پیپراسلین 4ایم جی 8339، ایسڈ 75ایم جی 7620، بیکاربونیٹ 7538، ایریتھروپاوٹین 4000آئی یو 7152، پولی جیلسٹن 5848، آئرن سکروس5205شامل ہیں، محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کے حکام کا کہنا ہے متعلقہ ہسپتالوں کی انتظامیہ کو دے دی گئی ہیں کہ وہ ان ادویات کے متبادل جلد از جلد کمپنیوں سے حاصل کریں اور ایسا نہ کرنے والے ہسپتالوں کے خلاف تحقیقات کی جائیں گی ۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More