<
Breaking News Pakistan - بریکنگ نیوز پاکستان
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

سوئس ود یگر غیر ملکی اکائونٹس ظاہر کرنے کیلئے امریکی طرز کے قانون کی تجویز

اسلام آباد(ساجد چودھری ) پاکستانی امراء کے سوئٹزرلینڈ سمیت دیگر غیر ملکی بینکوںمین کئی سو ارب ڈآلر کے اکائونٹس کو پاکستان میں الگ سے ظاہر کرنے کے لیے قانون کے خلا کو پر کرنے کے سلسلے میں امریکی ،فارن اکائونٹس ٹیکس کمپلائنس ایکٹ (FATCA)کے طرز پر نیا قانون بنانے کی تجویز دی گئی ہے اس قانون کے تحت پاکستانیوں کو غیر ملکی اکائونٹس ظاہر کرنا اور ان اکائونٹس میں ہونے والی لین دین کی تفصیل کو سالانہ بنیاد پر پاکستان مین انکم ٹیکس حکام کے سامنے پیش کرنا لازمی ہو گا۔ پاکستان نے پہلے ہی اس قانون پر عملدرآمد کے ضمن میں امریکہ کو تعاون کی فراہمی شروع کردی ہے جس کے تحت پاکستان میں کام کرنے والے امریکیوں کے بینک اکائونٹس کی معلومات امریکی محکمہ خزانہ کو فراہم کی جا رہی ہیں۔ یہ اپنی نوعیت کا منفرد قانون ہے جس میں امریکہ نے اپنے شہریوں کے لیے لازمی قرار دے رکھا ہے کہ وہ جس ملک میں بھی کاروبار، ملازمت کریں یا کوئی سروس فراہم کرین اور اس ضمن مین جو بھی اکائونٹ کھولین اس میں ہونے والی ٹرنازیکشنز کی رپورٹ امریکی محکمہ ٹیکس کو فراہم کریں ۔ پاکستان کو دنیا کے 28 ممالک مین سے کم وبیش دو لاکھ سے زائد غیر ملکی بینک اکائونٹس کی معلومات حاصل ہو چکی ہین اور سال 2019 کے اختتام پر آرگنائزیشن فار کوآپریشن اینڈ ڈویلپمنٹ( او ای سی ڈی) جیسے 160 سے زائد ممالک پر مشتمل معاشی بلاک سے بھی پاکستانیوں کے بینک اکائونٹس کی معلومات رضا کارانہ طور پر ملنا شروعہو جائیں گی ۔ حکام کا کہنا ہے کہ اس قانون پرعملدرآمد کی صورت میں ترسیلات زر کو موجودہ 22 ارب ڈآلر سالانہ سے تیس ارب ڈآلر سالانہ تک بڑھایا جا سکے گا ماہرین کے مطابق اس وقت بیرون ممالک سے ہنڈی اور حوالہ کے ذریعے کم وبیش 10 ارب ڈآلر سالانہ کی ترسیلات ہو رہی ہین ماہرین کا خیال ہے کہ پاکستان او ای سی ڈی کے رکن ممالک اور سوئس بینکوں مین موجود پاکستانیوں کی دولت کی معولمات حاصل کرنے اور ان میں سے پچیس فیصد زر مبادلہ بھی لانے میں کامیاب ہو گیا تو زر مبادلہ کے بحران سے ہمیشہ کے لیے آزادہو جائے گااور مستقبل مین کسی نئے قرض پروگرام کی ضرورت نہیں رہے گی

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More