<
Breaking News Pakistan - بریکنگ نیوز پاکستان
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

قومی احتساب بیورو نے 22 ماہ کی مجموعی کارکردگی کی رپورٹ جاری کر دی

قومی احتساب بیورو- اسلام آباد

اسلام آباد: ( 02 ستمبر 2019 ): قومی احتساب بیورو کے چئیرمین جناب جسٹس جاوید اقبال کی سربراہی میں نیب ہیڈ کوارٹرز میں ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں نیب کی مجموعی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا ۔ اجلاس میں قومی احتساب بیورو کے چئیرمین جناب جسٹس جاوید اقبال چئیرمین نیب کی قیادت میں اکتوبر 2017سے ابتک نیب کی شاندار کارکردگی کا جائزہ لیا گیا ۔چئیرمین نیب جناب جسٹس جاوید اقبال کی قیادت میں نیب نے اکتوبر 2017 سے ابتک تقریبا 22 ما ہ کے دوران بلواسطہ اور بلا واسطہ مجموعی طور پر تقریبا 71 ارب روپے بدعنوان عنا صر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے جو کہ ایک ریکارڈ کامیابی ہے اور اس کی مثال نیب کی تاریخ میںگزشتہ کسی بھی 22 ماہ میں نہیں ملتی۔ نیب نے جو رقوم بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پربرآمد کی ہیں ان کی تفصیل نیب کے ہر علاقائی بیوروز کی بدعنوان عناصر سے بلواسطہ اور بلا واسطہ طورپر برآمد کی گئی رقوم کی تفصیل مندرجہ ذیل ہے:
— نیب سکھر نے 10.656 ارب روپے کی بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر خطیر رقوم بدعنوان عناصر سے سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائی۔
— نیب لاہور نے31.231ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پربد عنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔
— نیب بلوچستان نے 0.949 ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر بد عنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔
— نیب کراچی نے 10.861 ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پربد عنوان عناصر سے سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔
— نیب راولپنڈی نے 14.653 ارب روپے کی رقوم بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر بدعنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائی۔
— نیب ملتان نے 2.5 ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پربدعنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے ۔
— نیب خیبر پختوںخواہ نے 0.5 ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر بد عنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔
— نیب گلگت بلتستان نے 0.014 ارب رو پے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر بد عنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔
چیرمین نیب جناب جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ اور بدعنوان عناصر سے قوم کی لوٹی گئی رقوم کی واپسی نیب کی اولین ترجیح ہے جس کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ نیب نے گزشتہ22 ماہ میںتقریبا 71 ارب روپے کی خطیر رقوم بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پربدعنوان عنا صر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائی ہیں۔ انہوں نے نیب کے تما م ڈی جیز کو ہدایت کی کہ وہ ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے اپنی قومی زمہ داریوں کو سرانجام دینے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھیں اور ” احتساب سب کیلئے ” کی پالیسی پر سختی سے عمل کرتے ہوئے شکایات کی جانچ پڑتال ، انکوائریاں اور انوسٹی گیشنز مقررہ وقت کے اندر قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچائیں کیونکہ میگا کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانا نیب کی نہ صرف اولین ترجیح ہے بلکہ اس کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More